سانس میں بو آنے کی وجہ کیا ہے؟ اس سے نجات کے نسخے جانئے

اسلام آباد (پی پی این مانیٹرنگ ڈیسک) سانس میں بو کسے پسند ہوسکتی ہے؟ یقیناً اس سے پوری شخصیت کا تاثر خراب ہوجاتا ہے۔ مگر یہ بو پیدا کیوں ہوتی ہے اور اس کی وجہ کیا ہے؟ بنیادی طور پر تمام غذائیں منہ کے اندر ٹکڑوں میں تبدیل ہوتی ہیں۔
 اگر آپ تیز بو والی غذائیں جیسے لہسن یا پیاز کھاتے ہیں تو دانتوں کی صفائی یا ماوتھ واش بھی ان کی بو کو عارضی طور پر ہی چھپا پاتے ہیں۔
اور وہ اس وقت تک ختم نہیں ہوتی جب تک یہ غذائیں جسم سے گزر نہ جائیں۔ اگر روزانہ دانتوں کو برشنہ کیا جائے تو خوراک کے اجزاءمنہ میں باقی رہ جاتے ہیں، جس سے دانتوں کے درمیان، مسوڑھوں اور زبان پر جراثیموں کی تعداد بڑھنے لگتی ہے جو سانس میں بو کا باعث بنتے ہیں۔
تاہم اس کی کچھ اور وجوہات بھی ہوسکتی ہیں جو درج ذیل ہیں۔ ڈی ہائیڈریشن دانتوں کی ناقص صفائی سے ہٹ کر جسم میں پانی کی کمی سانس میں بو کی چند بڑی وجوہات میں سے ایک ہے۔
مایو کلینک کے مطابق مناسب مقدار میں پانی نہ پینا منہ میں بیکٹریا کی تعداد اور نشوونما بڑھاتا ہے،جس کا نتیجہ سانس میں بو کی شکل میں نکلتا ہے، مگر اس مسئلے کا حل بہت آسان ہے بس پانی زیادہ پینا شروع کردیں۔
کوئی سنگین مرض کولوراڈو یونیورسٹی کی ایک تحقیق کے مطابق سانس میں بو پیدا ہونا کچھ جان لیوا امراض کی بھی نشانی ہوسکتی ہے۔ تحقیق کے مطابق بہت زیادہ بو جگر اور گردوں کے امراض کی علامت ہوسکتی ہے جبکہ یہ گردے فیل ہونے کی بھی نشانی ہوتی ہے۔

Check Also

افطار کے وقت ہی رات کا کھانا کھاتے ہیں؟تو سنگاپورین رائس بنالیں

رمضان میں افراد کے دوران بہت سے افراد سموسے پکوڑوں جیسی ڈشز کھانا پسند کرتے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *