بدھ , اکتوبر 24 2018

نابینا پن کی وجہ بننے والا ’’مارک تھری جین‘‘ دریافت۔۔۔

کراچی(پی پی نیوز ڈیسک) سوئس اور پاکستانی ماہرین نے مشترکہ تحقیق کے بعد ایک ایسا نیا جین دریافت کیا ہے جو آنکھوں میں نقائص لاکر اندھے پن کی وجہ بنتا ہے۔

سوئٹزرلینڈ کی یونیورسٹی آف جنیوا اور جامشورو لیاقت یونیورسٹی آف میڈیکل اینڈ ہیلتھ سائنسز کے ماہرینِ جینیات نے پاکستانی خاندانوں کا بغور جائزہ لیا ہے۔ برسوں تحقیق کے بعد ماہرین نے ایک خاندان کے جینوم کا مطالعہ کیا ہے اور کئی خاندانوں میں نوٹ کیا کہ ان میں ایک خاص جین MARK3 اپنی عام (نارمل) ہیئت کے مقابلے میں خاصا تبدیل شدہ ہے۔ جینیات (جنیٹکس) کی زبان میں اس فرق کو ’’میوٹیشن‘‘ کہتے ہیں۔

اس ضمن میں ماہرین نے ایک خاندان کا مطالعہ کیا جس کے تینوں بچے متاثرہ تھے اور ان میں تبدیل شدہ مارک تھری جین پایا گیا تھا۔ واضح رہے کہ ان بچوں کے ماں اور باپ دونوں ہی قریبی رشتہ دار (کزنز) تھے جبکہ خود ان کے والدین بھی آپس میں قریبی عزیز تھے۔ اس طرح بچوں نے وراثت میں ماں اور باپ، دونوں ہی سے متاثرہ یا تبدیل شدہ مارک تھری جین کی ایک ایک کاپی (نقل) پائی تھی۔

’ہم نے ایک ایسے نئے جین میں مرض پیدا کرنے والی تبدیلی دیکھی جو اس سے قبل کبھی دریافت نہیں ہوئی تھی۔ یہ مارک تھری جین ہے جس میں تبدیلی سے خاندان کے  تین بچے متاثر تھے۔ تینوں میں فائسس بلبائی (آنکھوں کے سفید حصے سکڑنے کا) مرض مسلسل بڑھ رہا تھا،‘ ڈاکٹر محمد انصر نے بتایا جو یونیورسٹی آف جنیوا میں محقق ہیں۔

ان بچوں کی آنکھوں کے ڈولے دھیرے دھیرے سکڑ کر انہیں نابینا بنارہے تھے، یہاں تک کہ 30 سال کی عمر میں وہ بالکل غائب دیکھے گئے ہیں۔

اس تحقیق کےلیے ماہرین نے پہلے ان جین کو دیکھا جن سے پہلے کوئی مرض منسوب تھا اور اس معاملے میں آنکھوں کے متاثرہ مرض کو دیکھا گیا ۔ دوسرے مرحلے میں خاندان کے تمام اراکین کے، خواہ وہ آنکھوں کی بیماری کے شکار تھے یا نہیں، ڈی این اے کا جائزہ لیا گیا۔ اس طرح والدین اور بچوں کے ڈی این اے کو بغور دیکھا گیا۔

 

Check Also

انار، کینسر اور امراضِ قلب میں مفید پھل۔۔۔۔

کراچی(پی پی نیوز ڈیسک) آج کل بازار سرخ اور گلابی اناروں سے بھرے ہوئے ہیں جو …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے